اپنے کاروبار کی تشہیر کیسے کی جائے؟

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: کاروبار


کوئی بھی کاروبار چھوٹا ہو یا بڑا اچھی اور مناسب ایڈورٹائزنگ یعنی کہ تشہیر کے بغیر کامیاب نہیں ہو سکتا۔ آپکو اپنی مصنوعات یا سروسز کو اپنے متوقع خریداروں سے متعارف کروانا پڑتا ہے۔ آجکل بزنس میں مقابلے کا رحجان زیادہ ہو گیا ہے اور جو اپنے مال کی بہتر تشہیر کرتا ہے وہ دوسروں پر سبقت لے جاتا ہے۔

چاہے آپکا بزنس مقامی سطح کا ہو یعنی کہ کسی ایک کالونی یا محلے تک محدود ہو تب بھی مناسب تشہیر کے بغیر آپ اس سے مکمل فائدہ نہیں اٹھا سکتے۔ اس لیے جب آپ اپنے کاروبار کی پلاننگ کریں تو تو اس میں سرمائے کا ایک مناسب حصہ اس کی تشہیر کے لیے ضرور مختص کریں۔

کاروبار کی تشہیر کے مختلف انداز اور طریقے ہوتے ہیں جنکو استعمال کر کے آپ اپنے متوقع کلائنٹ تک اپنی بات یا پیغام پہنچا سکتے ہیں۔ اب یہ آپ کے بزنس اور بجٹ پر منحصر ہے کہ آپ تشہیر کا کونسا طریقہ اختیار کرتے ہیں۔ عام طور پر کاروبار یا مصنوعات کی ایڈورٹائزنگ کے لیے مندرجہ ذیل طریقے رائج ہیں:

اخبار میں تشہیر

2۔ رسائل و جرائد میں تشہیر کرنا

3۔ الیکٹرونگ میڈیا میں بزنس کی تشہیر

آن لائن ایڈورٹائزنگ

5۔ بروشر و اشتہارات کی تقسیم

6۔ کارآمد تحفوں سے تشہیر

7۔ ایس ایم ایس کے ذریعے ایڈورٹائزنگ

اوپر دیے گئے تمام طریقے آجکل اپنے کاروبار کی تشہیر کے لیے استعمال میں لائے جاتے ہیں اور کمپنیاں بڑھ چڑھ کر ان سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کر تی ہیں۔ بڑے کاروباری اداروں نے تو ایڈورٹائزنگ کے لیے مکمل شعبے بنا رکھے ہیں جو کہ اس کام میں ماہر لوگوں پر مشتمل ہوتے ہیں۔ ان کا کام ہی نت نئے اشتہاروں کے ذریعے کسٹمرز کو اپنی مصنوعات کی طرف راغب کرنا ہوتا ہے۔

اگر آپ کسی چھوٹے کاروبار کے مالک ہیں تو بھی اپنے حساب سے ایڈورٹائزنگ کو فراموش نہ کیجئے۔ درست طریقے سے ٹارگٹڈ تشہیر آپ کے بزنس کے لیے نہایت ہی ضروری ہے۔ اس کے لیے آپ اپنے دوستوں سے مشورہ لے سکتے ہیں یا بہترین طریقہ یہ ہے کہ اس کاروبار میں پہلے سے موجود لوگوں کے طریقہ کار کو دیکھیں، سمجھیں اور اس میں مناسب تبدیلیاں کر کے وہ طریقہ استعمال کر لیں۔

چھوٹے کاروبار کے مالکان کو ایڈورٹائزنگ پر بہت زیادہ اخراجات نہیں کرنے چاہیں بلکہ پہلے کاروبار کو مضبوط بنیادوںپر استوار کرنے کی کوشش کرنی چاہیئے جس کے بعد وہ بھر پور طریقے سے اس کی تشہیر کر سکتے ہیں۔

چاہے آپ کسی بھی قسم کی ایڈورٹائزنگ کرنا چاہیں اس بات کا خاص خیال رکھیں کہ اپنے اشتہاروں میں صرف وہی الفاظ استعمال کریں اور وہی وعدہ کریں جو آپ آسانی سے پورا کر سکتے ہوں۔ غلط اور جھوٹ بول کر اشتہارات کے ذریعے لوگوں کو اپنی جانب راغب کرنا آپ کے کاروبار کے لیے قطعاً فائدہ مند ثابت نہیں ہو گا۔ اس سے آپ کے کاروبار کی ساکھ متاثر ہو گی جو کہ نقصان کا موجب بن کر آپ کے لیے پریشانی پیدا کر دے گا۔

یاد رکھیں کہ جیت ہمیشہ سچ کی ہی ہوتی ہے۔


Share

Apne Karobar ki Advertising Kese Ki Jae?

Koi bi karobar chota ho ya barha achi or munasib advertising yani ke tash-heer ke beghair kamyab nai ho sakta. Apko apni masnooat ya services ko apne matawqo khareedaron se mutarif karwana parhta hy. Aaj kal business mein muqable ka rohjan zyada ho gya hy or jo koi apne maal ki behtar advertising krta hy wo doosron per sabqat le jata hy.

Chahe aap ka karobar muqami satha ka ho yani ke kisi aik colony ya mohale tuk mehdood ho tub bi munasib tash-heer ke beghair aap is se mukamal faida nai utha sakte. Is liye jub aap apne karobar ki planning kreinto is mein apne sarmye ka aik munasib hisa is ki tash-heer ke liye zaroor rakhein.

Karobar ki advertising ke mukhtalif andaz or tariqe hote hein jink astemal kr ke aap apne mutwaqo client ya customer tuk apni baat ya pegham ponchate hein. Ab ye aap ke business ya advertising budget per munhasir hota hy ke aap apne karobar ki advertising ke liye konsa tariqa ikhtiar krte hein. Aam tor per karobar ya musnuaat ki tasheer ke mundraja zail tariqe raij hein:

  • Akhbar mein advertising
  • Risalon or jareedon mein advertising
  • Electronic media mein karobar ki advertising
  • Online advertising
  • Brrochure or Ishtearaat ki taqseem
  • Kaar-aamad tohfon se advertising
  • SMS ke zariye advertising

  • Uper diye gye tmam tariqe aaj kal karobar ki advertising ke liye astemal mein laye jaate hein or companian barh charh kr in se faida uthane ki koshish krti hein. Barhe karobari idaron ne to apne karobar ki advertising ke liye alug se shobe bna rakhe hein jo ke is kaam mein mahir logon per mushtamil hote hein. In ka kaam hi nit nae ishteharon ke zariye customers ko apni products ki taraf raghib krna hota hy.

    Agar aap kisi chote karobar ke malik hein to bi apne hisab or budget ke mutabiq karobar ki advertising ko kabhi bi faramosh nah kijie. Darust tariqe se targeted advertising aap ke karobar ke liye bohat ahem hy. Is ke liye aap apne doston se mushwara le sakte hein ya behtreen tariqa ye hai ke is karobar mein pehle se mojood logon ke tariqa-e-kar ko dekhein or samjhein or is mein munsaib tabdeelian kr ke wo tariqa astemal kr lein.

    Chote karobar ke malkan ko shuru mein advertising per be-darekh paisa kharch nai krna chayie bulke pehle apne karobar ko mazboot buniadon per ustawar krna chaie, jis ke badh wo bhar poor tariqon se apne karobar ki tash=heer ker sakte hein.

    Chahe aap kisi bi qisam ki advertising krein is baat ka khas khyal rakhein ke apne ishtaharon mein sirf woi alfaz astemal krein or woi wadah krein jo aap aasani se poora ker sakte hon. Ghalat biani ker ke or jhoot bol ker ishtearat ke zariye logon ko apni taraf raghib kerna aap ke karobar ke liye kisi soorat faide-mund sabit nai ho sakta. Is se aap ki karobari sakh shadeed mutasir ho gi jo ke aage chal ker aap ke liye shadeed nuqsan ka mojab bun ker aap ke liye pareshani pida kre gi.

    Yaad rakhein ke jeet hamesha such ki hoti hy.

    Add Your Thoughts